تفصیلات
نقشے

یورپ میں بڑے نازی کیمپ، جنوری 1944

پورے جرمن مقبوضہ یورپ میں جرمنوں نے ان لوگوں کو گرفتار کیا جنھوں نے ان کے تسلط کو تسلیم کرنے سے انکار کیا اور جنہیں نسلی یا سیاسی اعتبار سے کم تر سمجھا گيا۔ جرمن تسلط کے خلاف مزاحمت کرنے والوں کو زیادہ تر جبری مشقت کے کیمپوں یا حراستی کیمپوں میں بھجوا دیا گیا۔ جرمنوں نے تمام تر مقبوضہ یورپی علاقوں سے یہودیوں کو جلا وطن کر کے پولینڈ میں واقع قتل کے مراکز میں بھجوا دیا جہاں اُنہیں منظم طریقے سے قتل کر دیا گیا یا پھر اُنہیں حراستی کیمپوں میں منتقل کیا گیا جہاں اُنہیں جبری مشقت کیلئے استعمال کیا گیا۔ مغربی یورپ میں واقع ویسٹربورک، گورز، میشیلن اور ڈرینسی عبوری کیمپوں اور اٹلی میں قائم بولزینو اور فوسولی ڈی کیپری حراستی کیمپوں کو یہودیوں کو جمع کرنے کے مراکز کے طور پر استعمال کیا گیا جنہیں بعد میں ریل گاڑیوں کے ذریعے قتل کے مراکز میں منتقل کیا گیا۔ ایس ایس رپورٹوں کے مطابق جنوری 1945 میں حراستی کیمپوں میں رجسٹرڈ قیدیوں کی تعداد سات لاکھ سے زائد تھی۔


  • US Holocaust Memorial Museum

شیئر کریں

آرٹیکل پر واپس جائیں

Major Nazi camps in Europe, January 1944 [LCID: eur72160]

Thank you for supporting our work

We would like to thank The Crown and Goodman Family and the Abe and Ida Cooper Foundation for supporting the ongoing work to create content and resources for the Holocaust Encyclopedia. View the list of all donors.