تفصیلات
Other

سیمون وائل کا جعلی اسٹوڈنٹ شناختی کارڈ

1943 میں ایک نیا شناختی کارڈ حاصل کرنے کے بعد سیمون وائل نے سن 1938-1939 کے کارڈ میں جعل سازی کر کے اپنا نام تبدیل کر کے فرضی نام سیمون ورلن لکھ دیا۔ یہ کارڈ اسٹراس برگ کے اسکول آف سوشل ورک میں داخلے کی تصدیق کرتا تھا۔ جعل سازی کے ذریعے بنائے گئے جھوٹے کاغذات کے استعمال سے وائل فرانس کے شہر چیٹیوروس میں پہنچنے میں کامیاب ہو گیا۔ وہاں اُس نے یہودی بچوں کے بچاؤ کی غرض سے ایک تنظیم قائم کی جو ریلیف اور ریسکیو تنظیم ایوورے ڈی سیکورز اوکس ایفینٹس (بچوں کی امدادی سوسائیٹی، او ایس ای) کی ممبر تھی۔


ٹیگ


  • US Holocaust Memorial Museum - Collections

Share This

Simone Weil's falsified student card [LCID: 1998hmn0]