ذاتی تاریخ

رزکا (روزا) گالیک برنزوک وارسا یہودی بستی میں پکڑ دھکڑ اور جلاوطنی سے اپنے فرار کا حال بتاتی ہیں

روزا کا خاندان 1934 میں وارسا منتقل ہو گیا۔ اُس نے 1939 میں ابھی کالج شروع کیا ہی تھا کہ جرمنی نے پولینڈ پر حملہ کر دیا۔ جرمنوں نے 1940 مین وارسا گھیٹو کو سیل کر دیا جہاں اُس کے والدین کو پکڑ دھکڑ کے دوران گولی مار دی گئی تھی۔ روزا وہاں سے فرار ہو کر چھپ گئی۔ اپنی چھپنے کی جگہ سے اُس نے 1943 کی بغاوت کے دوران گھیٹو کو جلتے ہوئے دیکھا تھا۔ اُس کے پاس جعلی کاغذات تھے جن پر لکھا تھا کہ وہ پولش کیتھولک (ماریہ کوویلچک) ہے اور اسے جون 1943 میں مویشیوں کی ایک گاڑی میں جرمنی جلاوطن کر دیا گیا۔ اُس نے 1945 میں آزادی تک ایک کھیت میں کام کیا۔

مکمل نقل

  • US Holocaust Memorial Museum Collection
آرکائیوز کی تفصیلات دیکھیں

یہ صفحہ مندرجہ ذیل مقامات پر بھی دستیاب ہے:

Thank you for supporting our work

We would like to thank Crown Family Philanthropies and the Abe and Ida Cooper Foundation for supporting the ongoing work to create content and resources for the Holocaust Encyclopedia. View the list of all donors.